اہم خبرپاکستانتازہ ترین

وہی ہوا جسکا ڈر تھا،190 ملین پاونڈ کیس: پرویز خٹک نے عمران خان کی موجودگی میں بیان عدالت میں ریکارڈ کرا دیا

وہی ہوا جسکا ڈر تھا،190 ملین پاونڈ کیس: پرویز خٹک نے عمران خان کی موجودگی میں بیان عدالت میں ریکارڈ کرا دیا

راولپنڈی 190 ملین پاؤنڈ ریفرنس میں سابق وزیر دفاع پرویز خٹک نے عدالت میں بیان ریکارڈ کرایا۔اڈیالہ جیل میں 190 ملین پاؤنڈز ریفرنس کی سماعت احتساب عدالت کے جج محمد علی وڑائچ نے کی، ریفرنس کے گواہ سابق وزیراعلیٰ پرویز خٹک تھے۔ پرویز خٹک نے عدالت میں اپنا بیان ریکارڈ کرایا۔ میں عمران خان اور بشریٰ بی بی بھی کمرہ عدالت میں موجود تھے۔ پرویز خٹک نے اپنے بیان میں کہا کہ نیب نے مئی 2023 میں مجھ سے 190 ملین پاؤنڈز کا بیان لیا، شہزاد اکبر نے کابینہ کو بتایا تھا کہ پاکستانی سے غیر قانونی رقم باہر بھیجی گئی۔برطانیہ میں بڑی رقم پکڑی گئی، شہزاد اکبر نے کہا ضبط شدہ رقم پاکستان واپس لائی جائے گی، یہ لایا گیا تھا، اضافی ایجنڈے پر مجھ سمیت کابینہ کے دیگر ارکان نے اعتراض کیا، رقم سے متعلق دستاویزات مہر بند لفافے میں کابینہ میں پیش کی گئیں، منظوری کابینہ سے اضافی ایجنڈا لیا گیا۔ پرویز خٹک نے کہا کہ ریفرنس کے تفتیشی افسر نے بتایا کہ ایجنڈے کے ساتھ ایک تحریر بھی تھی۔آج کی سماعت میں ایک گواہ پر جرح مکمل اور ایک گواہ کا بیان قلمبند کر لیا گیا۔ ان کا کہنا تھا کہ پرویز خٹک کو عمران خان کے خلاف حلف برداری کے لیے بلایا گیا ہے، پرویز خٹک نے عمران خان کے خلاف بیان دیا تو انہیں صوبے میں نہیں رہنے دیا جائے گا۔ علی امین گنڈا پور کے بیان پر پرویز خٹک نے ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ علی امین مجھے جانتے ہیں اور میں علی امین کو اچھی طرح جانتا ہوں، علی امین بدتمیزی نہ کریں، نیب نے نوٹس بھیج کر مجھے بلایا ہے، میں خلاف بیان نہیں دوں گا۔ کوئی بھی ہو، لیکن اس وقت کابینہ میں کیا ہوا، میں بیان کروں گا۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button